روسی صدرکے حکم پر ایٹمی آبدوزیں امریکی ساحلوں پرسمندر کی تہہ میں ایٹم بم نصب کر رہی ہیں اورروسی بحریہ یہ ایٹم بم اس وقت استعمال کرے گی جب تیسری عالمی جنگ شروع ہو گی

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک)روس او رامریکہ دونوں اس وقت دنیاکی بڑی سپرپائورزہیں اورآئے روز دونوں ممالک کی قیادت کی طرف سے سخت سے سخت بیانات سامنے آرہے ہیں جس سے ظاہرہوتاہے کہ روس او رامریکہ کے تعلقات میں کشیدگی ہرروزمزیدبڑھ رہی ہے۔انہی دنوں امریکہ کے دفاعی تجزیہ نگارنے انکشاف کیاہے کہ امریکہ چین او ر روس پرپہلے اوراچانک ایٹمی حملے کی مکمل تیاری کرچکاہے ۔

اس انکشاف کے بعد روس نے بھی امریکہ کومنہ دینے  کی دھمکی دی ہے ۔معروف انگریزی جریدے ڈیلی سٹارکی ایک رپورٹ کے مطابق روسی فوج کے سابق کرنل برانیزنے ایک خطرناک انکشاف کیاہے کہ روسی صدرکے حکم پر ایٹمی آبدوزیں امریکی ساحلوں پرسمندر کی تہہ میں ایٹم بم نصب کر رہی ہیں اورروسی بحریہ یہ ایٹم بم اس وقت استعمال کرے گی جب تیسری عالمی جنگ شروع ہو گی اورسمندرمیں نصب روسی ایٹم بموں کے دھماکے سے ایک سونامی آئے گاجس کی شدت اتنی زیادہ ہوگی کہ امریکہ تباہ وبربادہوجائے گا۔انہوں نے ایک اورخطرناک انکشاف کیاہے کہ روسی بحریہ سمندرکی تہہ میں نصب کئے جانے والے ایٹم بموں کے ساتھ میزائل بھی نصب کررہی ہے اوریہ خطرناک ترین میزائل اس وقت تک سمندر کی تہہ میں پڑے رہیں گے جب تک انہیں ایٹم بموں کو دھماکوں سے اڑایانہیں جاتااورجب یہ ایٹم بم ان میزائلوں کے ذریعے پھاڑے جائیں گے توسمندری سونامی سے امریکی کی تباہی شروع ہوجائے گی اورقیامت کامنظرہوگاجس کااندازہ امریکہ کونہیں اوریہ ایٹمی سونامی امریکہ کواپنی لیپٹ میں لے گااورسب کچھ نیست ونابودکردے گا۔ڈیلی سٹارکی رپورٹ میں کیاجانے والادعوی اگردرست ہے توپھرروس کی طرف سے سمندرمیں بپاکیاجانے والا ایٹمی سونامی اٹھنے سے امریکہ میں کئ بڑے ا ور اہم ترین شہرجن میں نیویارک ،میامی ا وربوسٹن شامل ہیں اس دنیاسے ہمیشہ کےلئے ختم ہوجائینگے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *