پانی کی قلت اور لوڈشیڈنگ بلدیہ کا لاکھوں روپے کاڈیزل اور پیٹرول 

سانگھڑ

پانی کی قلت اور لوڈشیڈنگ بلدیہ کا لاکھوں روپے کاڈیزل اور پیٹرول

سانگھڑ کے تالابوں کاپانی بیچا جارہا ہے اور سیوریج کا پانی بھی زرعی زمین کو بیچا جارہا ہے .مطلب گٹر کے پانی کو اسٹاک کرکے زرعی زمین کاشت کی جارہی ہے اور گٹر کا پانی لاکھوں روپے کا بیچا جاتا ہے جو قانونی جرم ہے.
کام کرنے کے لئے بہانے نہیں بنائے جاتے بلکہ متبادل راستہ اختیار کیا جاتا ہے تاکہ شکایات کم سے کم ہوں
کچھ صحافی جو کہ عملبردار بنتے ہیں صحافت کے وہ بھی صرف فیس بک کی خبر کاپی کرکے چلادیتے ہیں صرف اور صرف جیب خرچ کے لئے کیونکہ ان کی روزی روٹی وہیں سے چلتی ہے ایک ڈیزل یا پیٹرول کی پرچی خبر رکوانے کے لئے کافی ہے.لوڈشیڈنگ کا مسئلہ اپنی جگہ مگر بلدیہ کے لاکھوں روپے ڈیزل اور پیٹرول کی مد میں جاتے ہیں اگر کچھ پیٹرول اور ڈیزل پانی کے ٹینکر کی صورت میں عوام کی بہبود پر خرچ کردیا جائے تو لوگوں کی وقتی پریشانی دور ہوسکتی ہے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *