سول ہسپتال سانگھڑ میں وارڈ کے گیٹ کیپر اور قومپرست جماعت کے سیاسی کارکن کی آپس میں تلخ کلامی کے بعد ایک دوسرے کو مارپیٹ۔

 

سول ہسپتال سانگھڑ میں وارڈ کے گیٹ کیپر اور قومپرست جماعت کے سیاسی کارکن کی آپس میں تلخ کلامی کے بعد ایک دوسرے کو مارپیٹ۔
تفصیلات کے مطابق آج صبح ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے وزٹ کے دوران ایک قومپرست سیاسی جماعت کے کچھ کارکن اپنے ساتھی مریض کی عیادت کے لئے اندر جانے کی کوشش کی جس پر گیٹ پر کھڑے گیٹ کیپر یونس خاصخیلی نے انھیں روکا جس پر قومپرست جماعت کے سیاسی کارکن تیش میں آگئے اور بات تلخ کلامی سے جھگڑے تک جا پنہنچی۔ جس کے بعد پیرا میڈیکل اسٹاف نے احتجاجََ کام چھوڑ دیا جس پر ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر نے فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے مذکورہ کارکنان کیخلاف پولیس میں شکایت درج کرادی۔ اس موقع پر سول سرجن اور پیرامیڈیکل اسٹاف کا کہنا تھا کہ اسماعیل جونیجو کچھ عرصہ قبل ہمارے ڈسپنسر کیساتھ بدتمیزی کر چکا ہے۔
دوسری جانب سندھ ترقی پسند پارٹی کے ضلعی صدر جبار جونیجو کا کہنا تھا کہ ہماراے ایک کارکن ریاض کلہوڑو کو گذشتہ روز کچھ نامعلوم لڑکوں نے تشدد کر کے زخمی کردیا تھا جو کہ سول ہسپتال میں داخل ہے جس کی پولیس رپورٹ بھی درج ہے جبکہ زخمی ریاض کلہوڑو کی عیادت کے لئے کارکنان پنہنچے تو ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے وزٹ کا جواز بنا کر اندر جانے سے روکا جس پر ان کے مابین تلخ کلامی ہوئی اور ہمارے کارکنان کیساتھ بدتمیزی کی گئی اور اس کے بعد جھگڑے کا جھوٹا الزام لگاتے ہوئے پولیس میں شکایت درج کروا دی۔ اس کے بعد ہم نے فوری طور پر ضلع کے عہدیداران اور ممبران کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے جس میں آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا اور قانونی طریقے سے پُرامن رہتے ہوئے اپنا احتجاج بھی رکارڈ کروائیں گے اور کورٹ سے بھی رجوع کریں گے۔

More from my site

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *