بلدیہ بورے والا کا ماہانہ اجلاس،سالانہ ٹھیکہ جات اور 14 اگست کے انتظامات کو حتمی شکل دینے کی منظوری دیدی

بورے والا(چوہدری اصغر علی جاوید سے)بلدیہ بورے والا کا ماہانہ اجلاس،بلدیہ کے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ،سالانہ ٹھیکہ جات اور 14اگست کے انتظامات کو حتمی شکل دینے کی منظوری دیدی،کچی آبادیوں کے مسائل کے حل کے لئے سفارشات تیار کرنے اور بلدیہ کی اوکڑائے چونگیات کو اپنی تحویل میں لینے کی تجاویز پیش،شہر کی تعمیر و ترقی اور خوبصورت بنانے میں وزیر اعلیٰ پنجاب کے پی ایس او کی خصوصی خدمات کو خراج تحسین،میونسپل کمیٹی(بلدیہ)بورے والا کا ماہانہ اجلاس زیر صدارت وائس چیئر مین حاجی محمد افتخار بھٹی منعقد ہوا جس میں چیئر مین بلدیہ چوہدری محمد عاشق آرائیں،چیف آفیسر بلدیہ راﺅ محمد علی،تحصیل آفیسر فنانس محمد یاسین کھچی اور سیکرٹری اسمبلی ماجد یوسف کے علاوہ ہاﺅس کے ممبران نے شرکت کی اجلاس میں حکومت کی جانب سے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 10فیصد اضافے کی روشنی میں بلدیہ کے تمام ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کی منظوری دیدی گئی جبکہ چیئر مین نیلام کمیٹی رانا شاہد سرور کے بلدیہ کے نیلام شدہ سالانہ ٹھیکہ جات کی تفصیل پیش کی ایوان نے انکی منظوری دیدی اجلاس میں چیئر مین بلدیہ بورے والا چوہدری محمد عاشق آرائیں نے ایوان کو بتایا کہ کچی آبادیوں کے مالکانہ حقوق سمیت دیگر مسائل کے حل کے لئے محکمہ لوکل گورنمنٹ کو سفارشات بھیج دی گئی ہیں جسکی منظوری کے بعد ایوان میں پیش کر دی جائیں گی اجلاس میں پی ٹی آئی رکن شہباز حسین باجا بھٹی اور (ن)لیگی رکن سردار ظہور احمد ڈوگر نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے پی ایس او رانا عامر کریم اور ان کے بھائی مقامی اسٹیٹ ڈویلپر رانا طاہر کریم کی جانب سے شہر کی تعمیر و ترقی کے منصوبوں کی منظوری اور شہر کی خوبصورتی کے لئے اپنی طرف سے منصوبے شروع کرنے پر انہیں خراج تحسین پیش کیا اسکے علاوہ چیئر مین بلدیہ نے 14اگست جشن آزادی کے حوالہ سے انتظامات کو حتمی شکل دینے کی بھی منظوری دیدی ایوان میں اپوزیشن لیڈر غلام مصطفےٰ بھٹی نے کہا کہ انہوں نے ریت کے ٹھیکیداروں کی جانب سے کی جانے والی اوور چارجنگ کے متعلق سابقہ اجلاس میں پیش کی تھی جسے کاروائی کا حصہ نہیں بنایا گیاجس پر میرا احتجاج نوٹ کیا جائے انہوں نے الزام عائد کیا کہ بلدیہ کی قیادت ایوان سے بالا بند کمروں میںبیٹھ کر فیصلے کر کے ہمارا استحقاق مجروح کر رہی ہے ایوان کو بتایا گیا کہ بلدیہ کی ملکیت اوکڑائے چونگیات کی بلڈنگز کو اپنی تحویل میں لے کر انکی کھلی نیلامی کے ذریعہ بلدیہ کی آمدنی میں اضافہ کی بھی تجویز زیر غور ہے جس میں ایوان نے متفقہ طور پر قابل عمل قرار دیا۔

About Author

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے